Nigaha ishaq ka allama iqbal urdu ghazal

Nigaha ishaq ka allama iqbal urdu ghazal

Nigaha ishaq ka allama iqbal urdu ghazal   نگاہ فقر میں شان سکندری کیا ہے- خراج کی جو گدا ہو ، وہ قیصری کیا ہے- بتوں سے تجھ کو امیدیں ، خدا سے نومیدی- مجھے بتا تو سہی اور کافری کیا ہے- فلک نے ان کو عطا کی ہے خواجگی کہ جنھیں- خبر نہیں روش … Read more